Jump to content
CooLYar Forums - A Friendly Community by CooLYar
Sign in to follow this  
Amaya

Amaya's Collection...

Recommended Posts

میری محدود بصارت کا نتیجہ نِکلا

آسماں میرے تصّور سے بھی ہلکا نِکلا

روزِ اوّل سے ہے فطرت کا رقیب آدم زاد

دُھوپ نِکلی تو میرے جسم سے سایا نِکلا

جب بھی اُٹھا کوئی فِتنہ، مُجھے محسوس ہوُا

کہ جو ابلیس کا دعویٰ تھا، وہ سچّا نِکلا

سرِ دریا تھا چراغاں، کیا اجل رقص میں تھی

بلبلا جب کوئی ٹوٹا تو شرارا نِکلا

بات جب تھی کہ سرِ شام فروزاں ہوتا

رات جب ختم ہوُئی، صبح کا تارا نِکلا

مدّتوں بعد جو رویا ہوُں، تو یہ سوچتا ہوُں

آج تو سینۂ صحرا سے بھی دریا نِکلا

کچھ نہ تھا،کچھ بھی نہ تھا، جب میرے آثار کھُدے

ایک دل تھا، سو کئی جگہ سے ٹُوٹا نِکلا

لوگ شہ پارہء یک جائی جسے سمجھے تھے

اپنی خلوت سے جو نکلا تو بِکھرتا نِکلا

میرا ایثار میرے زعم میں بے اجر نہ تھا

اور مَیں اپنی عدالت میں بھی جھُوٹا نِکلا

وہی بے انت خلا ہے، وہی بے سمت سفر

میرا گھر میرے لیے عالمِ بالا نِکلا

زندگی ریت کے ذرّات کی گِنتی تھی ندیم

کیا ستم ہے! کہ عدم وہی صحرا نِکلا

Share this post


Link to post
Share on other sites

beautiful...one

Tazaad-E-Jazbaat Mein Yeh Naazuk Muqaam Aaya To Kya Karo Gey

Main Ro Raha Hoo'n Tum Hans Rahe Ho, Main Muskuraya To Kya Karo Gey

Mujhey To Iss Darja Waqt-E-Rukhsat Sukoo'n Ki Talqeen Kar Rahe Ho

Magar Kuch Apney Liye Bhi Socha, Main Yaad Aaya To Kya Karo Gey

Utar To Saktey Ho Paar Lekin Ma'aal Par Bhi Nigaah Kar Lo

Khuda Na Karda Sukoon-E-Sahil Na Raas Aaya To Kya Karo Gey

Abhi To Tanqeed Ho Rahi Hai, Merey Mazaj-E-Junoo'n Pe Lekin

Tumhaari Zulfoo'n Ki Barhami Ka Sawaal Aaya To Kya Karo Gey

Abhi To Daaman Chura Rahe Ho , Bigar Ke mehfil Se Jaa Rahe Ho

Magar Kabhi Dil Ki dharkanoo'n mein shareek paya to kya karo gey

Simply Awsum Amaya :flower4u:

Share this post


Link to post
Share on other sites

shukriya rayyan

zindagi k mele main

khwahishon k rele main

Tum se kya kahen janah

Is qadar jhamele main

Waqt ki rawani hai

Bakht ki girani hai

Sakht bezamini hai

Sakht lamakani hai

Hijr k samandar main

Takht aur takhte ki

Aik hi kahani hai

Tum ko jo sunani hai

Baat go zara si hai

Baat umr bhar ki hai

Umr bhar ki baten kab

Do ghari main hoti hain

Dard k samandar main

Anginat jaziren hain

Beshumar moti hain

Aankh k dareeche main T

Tum ne jo sajaya tha

Baat us diye ki hai

Baat us gile ki hai

Jo lahoo ki khilvat main

Chor ban k aata hai

Lafz k fasilon par

Tut tut jata hai

Zindagi se lambi hai

Baat ratjage ki hai

Raaste main kaise ho

Baat takhliye ki hai

Takhliye ki baton main

Guftagu izafi hai

Pyar karne valon ko

Aik nigah kafi hai

Ho sake tho sun jao

Aek din akale main

Tum se kya kahen janah

Iss qadar jhamele main

Aik aur zabar10 Shareing :flower4u:

Share this post


Link to post
Share on other sites

Abhi zid na kar dil -e- be khabar!

ke pas -e- hajoom -e- sitam garaan

abhi kon tujh se wafa kare

abhi kis ko fursatein iss qadar

ke samait kar teri kirchiyaan

tere haq main khud se dua kare

abhi zid na kar dil -e- be khabar

ke tah -e- ghubaar -e- gham -e- jahaan

kahan kho gaye tere chaara gar

ke raah -e- hayaat main rayegaan

kahan so gaye tere hamsafar

abhi gham gusaaron ki chott seh

abhi kuch na sun abhi kuch na keh

abhi zid na kar mere be nawaa

kabhi yun bhi ho ke sarr -e- ufaq

tere dukh ka chaand damak utthay

koi tees khud se chamak utthay

kisi sheher -e- zakhm -e- farosh main

koi zakhm khud se khareed kar

sabhi aks khud se khurach kabhi

kisi aayeine par na deed kar

kabhi yun bhi jashn -e- tarab manaa

kabhi iss tarah se bhi eid kar.

Excellent Amaya :flower4u:

Share this post


Link to post
Share on other sites

میری محدود بصارت کا نتیجہ نِکلا

آسماں میرے تصّور سے بھی ہلکا نِکلا

روزِ اوّل سے ہے فطرت کا رقیب آدم زاد

دُھوپ نِکلی تو میرے جسم سے سایا نِکلا

جب بھی اُٹھا کوئی فِتنہ، مُجھے محسوس ہوُا

کہ جو ابلیس کا دعویٰ تھا، وہ سچّا نِکلا

سرِ دریا تھا چراغاں، کیا اجل رقص میں تھی

بلبلا جب کوئی ٹوٹا تو شرارا نِکلا

بات جب تھی کہ سرِ شام فروزاں ہوتا

رات جب ختم ہوُئی، صبح کا تارا نِکلا

مدّتوں بعد جو رویا ہوُں، تو یہ سوچتا ہوُں

آج تو سینۂ صحرا سے بھی دریا نِکلا

کچھ نہ تھا،کچھ بھی نہ تھا، جب میرے آثار کھُدے

ایک دل تھا، سو کئی جگہ سے ٹُوٹا نِکلا

لوگ شہ پارہء یک جائی جسے سمجھے تھے

اپنی خلوت سے جو نکلا تو بِکھرتا نِکلا

میرا ایثار میرے زعم میں بے اجر نہ تھا

اور مَیں اپنی عدالت میں بھی جھُوٹا نِکلا

وہی بے انت خلا ہے، وہی بے سمت سفر

میرا گھر میرے لیے عالمِ بالا نِکلا

زندگی ریت کے ذرّات کی گِنتی تھی ندیم

کیا ستم ہے! کہ عدم وہی صحرا نِکلا

nice keep it ip

Share this post


Link to post
Share on other sites

لطف وہ عشق میں پائے ہیں کہ جی جانتا ہے

رنج بھی ایسے اٹھائے ہیں کہ جی جانتا ہے

تم نہیں جانتے اب تک یہ تمہارے انداز

وہ میرے دل میں سمائے ہیں کہ جی جانتا ہے

انہی قدموں نے تمھارے انہی قدموں کی قسم

خاک میں اتنی ملائے ہیں کہ جی جانتا ہے

جو زمانے کے ستم ہیں ، وہ زمانہ جانے

تو نے دل اتنے ستائے ہیں کہ جی جانتا ہے

مسکراتے ھوئے وہ مجمعء اغیار کے ساتھ

آج یوں بزم میں آئے ہیں کہ جی جانتا ہے

سادگی، بانکپن، اغماض، شرارت، شوخی

تو نے انداز وہ پائے ہیں کہ جی جانتا ہے

کعبہ و دیر میں پتھرا گئیں دونوں آنکھیں

ایسے جلوے نظر آئے ہیں کہ جی جانتا ہے

دوستی میں تری درپردہ ہمارے دشمن

اس قدر اپنے پرائے ہیں کہ جی جانتا ہے

داغ_وارفتہ کو ہم آج تیرے کوچے سے

اس طرح کھینچ کے لائے ہیں کہ جی جانتا ہے

Share this post


Link to post
Share on other sites

Weldone Amaya... :yes:

-----------------------------------

here is no next collection competition going to start for next month... Due to Rules volition this collection also going to unpinned..!

Share this post


Link to post
Share on other sites

Lutf wo Ishq mai paye hain k jee jaanta hai

my all time fav ghazal sang by Noor Jahan. :flower4u::flower4u:

Awesome sharing Amaya :clap::clap:

Share this post


Link to post
Share on other sites

ahan nice collection u have amaya

keep it up!

Share this post


Link to post
Share on other sites

جو تم ٹھہرو تو ہم آواز دیں عمرِ*گریزاں کو،

ابھی اک اور نشتر کی ضرورت ہے رگِ جاں کو،

کبھی ہم نے بھی رنگ و نور کی محفل سجائی تھی،

کبھی ہم بھی سمجھتے تھے چمن اک روئے خنداں کو،

کبھی ہم پر بھی یونہی فصلِ گل کا سحر طاری تھا،

کبھی ہم بھی جنوں کا حق سمجھتے تھے گریباں کو،

کہیں ایسا نہ ہو شیرازہء ہستی بکھر جائے،

نہ دیکھو اس توجہ سے کسی آشفتہ ساماں کو،

تری جمعیتِ خاطر کا دشمن کون ہے ظالم؟

خدا ناکردہ توُ سمجھے مرے حالِ*پریشاں کو،

کسی کا دوست ہے کوئی نہ کوئی دشمنِ جاں ہے،

حزیں اپنے ہی سائے ڈس گئے کمبخت انساں کو۔۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

bhout mushkil hoo gai akhri gazal yikes.gif

Share this post


Link to post
Share on other sites
:tease:lolxxxx...mushkil hi theek hai Emaad..ab ap ki samjh main kahan ;)

Share this post


Link to post
Share on other sites

جو تم ٹھہرو تو ہم آواز دیں عمرِ*گریزاں کو،

ابھی اک اور نشتر کی ضرورت ہے رگِ جاں کو،

کبھی ہم نے بھی رنگ و نور کی محفل سجائی تھی،

کبھی ہم بھی سمجھتے تھے چمن اک روئے خنداں کو،

کبھی ہم پر بھی یونہی فصلِ گل کا سحر طاری تھا،

کبھی ہم بھی جنوں کا حق سمجھتے تھے گریباں کو،

کہیں ایسا نہ ہو شیرازہء ہستی بکھر جائے،

نہ دیکھو اس توجہ سے کسی آشفتہ ساماں کو،

تری جمعیتِ خاطر کا دشمن کون ہے ظالم؟

خدا ناکردہ توُ سمجھے مرے حالِ*پریشاں کو،

کسی کا دوست ہے کوئی نہ کوئی دشمنِ جاں ہے،

حزیں اپنے ہی سائے ڈس گئے کمبخت انساں کو۔۔

samajh nahi aye mujhe :wacko:

Share this post


Link to post
Share on other sites

oye itni peyaari gahzal..........wah wah...ab pls iski tashreeh ker k bhi samjha doo k likha kiya hua hai blush.gifblush.giftease.gif

Share this post


Link to post
Share on other sites

Gulaab Dil Mein Tho Aankhon Mein Roshni Thi Bohat

Mein Uss Ko Chaand Ki Saa'at Mein Dekhti Thi Bohat

Tumhari Chashm e Tamanna Mein Hi Gulaal Na Tha

K Meire Khwabon Ki Rangat Bhi Champa'i Thi Bohat

So Dil Ne thak K Abhi Se Parrao Daal Dia

K Tera Saath Na Tha Aur Zindagi Thi Bohat

Kuch Iss Liye Bhi Ziada Tujhe Nahih Dekha

K Teire Chehre Pe Uss Roz Be Rukhi Thi Bohat

Mein Bazm e Anjum O Mehtaab Le K Kia Kerthi

Chiragh e Jaan Ko Tho Ek Teiri Roshni Thi Bohat

Iss Liye Tho Bohat Nam Hai Meiri Aankhon Mein

K Aik Baar Teire saath Mein Hansi Thi Bohat

Khula Nahih Meire Dil Pe K Aw'wal e Shab e Wasl

Shahab Tha Teira Chehra K Chandni Thi Bohat

Tumhare Hijr Ne Khola Dar e Shanasaayi

Zameen e Shehr O Sukhan Pehle Ajnabi Thi Bohat

Share this post


Link to post
Share on other sites

Chiraagh maangtay rehnay ka kuch sabab bhi nahin,

Andhaira kesay bitaaien kay ab tou shab bhi nahin

Main apnay zoam main aik baazyaaft par khush hoon,

Yeh waaqiya hai kay mujh ko mila woh ab bhi nahin

Jo meray shair main mujh say zyaada bolta hai,

Main us ki bazm main aik hurf-e-zer-e-labb bhi nahin

Aur ab to zindagi guzaarnay kay sau tareeqay hain,

Hum us kay hijr main tanha rahay thay jab bhi nahin

Kamaal shakhs tha jis nay mujhay tabaah kiya,

Khilaaf us kay yeh dil ho saka ab bhi nahin

Yeh dastakien, yeh meri zindagi ki aadhi raat,

Hawaa ka shor samajh loon to kuch ajab bhi nahin

Yeh dukh nahi kay andhairon say sulaah ki ham nay,

Malaal yeh hai kay ab subah ki talab bhi nahin

Hisaab-e-dar badri tujh say maang sakta hai,

Ghareeb-e-shehar magar itna bay adab bhi nahin

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now
Sign in to follow this  

×

Important Information

We have placed cookies on your device to help make this website better. You can adjust your cookie settings, otherwise we'll assume you're okay to continue.